لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر کو باضابطہ طور پر اسلامی جمہوریہ پاکستان کا نیا آرمی چیف مقرر کر دیا گیا۔

صدر مملکت عارف علوی نے لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر کو نیا چیف آف آرمی سٹاف تعینات کرنے کی سمری پر دستخط کر دیئے۔

وہ 29 نومبر 2022 کو جنرل ہیڈ کوارٹرز کی تبدیلی کی تقریب میں پاک فوج کا چارج سنبھالیں گے۔

اب لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر نئے آرمی چیف ہیں اور لیفٹیننٹ جنرل ساحر شمشاد مرزا اگلے چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی (CJCSC) ہیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ صدر علوی اور وزیر اعظم شہباز شریف جلد ہی دونوں نئے تعینات ہونے والوں سے ملاقاتیں کریں گے۔

قبل ازیں وزیراعظم شہباز شریف نے سبکدوش ہونے والے جنرل قمر جاوید باجوہ کی جگہ لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر کو ملک کا نیا آرمی چیف مقرر کیا۔ لیفٹیننٹ جنرل ساحر شمشاد مرزا کو جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی کا چیئرمین مقرر کر دیا گیا ہے۔

وزیر اعظم پاکستان محمد شہباز شریف نے اپنے آئینی اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے لیفٹیننٹ جنرل ساحر شمشاد مرزا کو چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف اور لیفٹیننٹ جنرل سید عاصم منیر کو چیف آف آرمی سٹاف تعینات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے ٹویٹ کیا۔

اس کی سمری صدر پاکستان کو بھیج دی گئی ہے۔ صدر مملکت عارف علوی نے لاہور میں پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان سے ملاقات کی اور نئے سربراہ کی تقرری کے معاملے پر تبادلہ خیال کیا۔ اب چند منٹ قبل صدر عارف علوی نے لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر کو پاکستان کا نیا آرمی چیف مقرر کرنے کی سمری پر باضابطہ دستخط کر دیے۔

صدر کی جانب سے دستخط کرنے کے بعد سمری واپس وزیراعظم ہاؤس بھجوائی جائے گی جس کے بعد وزارت دفاع اور جی ایچ کیو کو بھجوائی جائے گی۔

یاد رہے کہ موجودہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ 29 نومبر 2022 کو اپنی 6 سالہ مدت پوری کر کے ریٹائر ہو جائیں گے۔ کمان سونپنے کی رسمی تقریب 29 نومبر کو جی ایچ کیو میں ہوگی جہاں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے نئے تعینات ہونے والے آرمی چیف کو پاک فوج کی کمان سونپی۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں