کھیلوں اور ملبوسات کے مشہور برانڈ ایڈیڈاس نے 12 سالہ پاکستانی ٹینس اسٹار ہانیہ منہاس کو اپنا برانڈ ایمبیسیڈر مقرر کیا

پاکستان کی نوجوان ٹینس سٹار ہانیہ منہاس کو دنیا کے سب سے بڑے اسپورٹس اور ملبوسات کے برانڈز ایڈیڈاس نے اپنے برانڈ ایمبیسیڈر کے طور پر رکھا ہے۔ 12 سالہ نوجوان یہ تاریخی سنگ میل حاصل کرنے والا پاکستان کا سب سے کم عمر اور پہلا نوعمر ایتھلیٹ ہے۔

ہانیہ منہاس ایڈیڈاس کے برانڈ ایمبیسیڈر کے طور پر خدمات انجام دینے والے صرف چند پاکستانی کھلاڑیوں کا حصہ ہیں۔ اس سے قبل پاکستان کے قومی کرکٹر حسن علی نے ملٹی نیشنل کمپنی کے ساتھ جوتوں کا معاہدہ کیا تھا جب کہ اظہر علی اور وہاب ریاض کو بھی ایڈیڈاس کی جانب سے پاکستان سے اپنا برانڈ ایمبیسیڈر بنانے کی افواہیں تھیں تاہم دونوں کرکٹرز کے حوالے سے کوئی ٹھوس رپورٹ سامنے نہیں آئی تھی۔ .

وزیر اعظم پاکستان کے سابق مشیر برائے تجارت و سرمایہ کاری عبدالرزاق داؤد نے ٹوئٹر پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مجھے یہ اعلان کرتے ہوئے خوشی ہو رہی ہے کہ ہانیہ منہاس اب باضابطہ طور پر ایڈیڈاس کی ٹیم میں بطور برانڈ ایمبیسیڈر شامل ہو رہی ہیں۔

واضح رہے کہ عبدالرزاق داؤد بلقیس اور عبدالرزاق داؤد (BARD) فاؤنڈیشن کے بانی ہیں، جو ہانیہ کی نو سال کی عمر سے سرپرستی کر رہے ہیں۔

یاد رہے کہ ہانیہ منہاس کا تعلق کراچی سے ہے اور اس نے حال ہی میں نیویارک میں لٹل مو انٹرنیشنلز میں متعدد ٹائٹل جیتنے کی وجہ سے شہرت حاصل کی۔ ہانیہ منہاس نے ٹورنامنٹ میں مجموعی طور پر تین ٹائٹل جیتے کیونکہ اس نے ٹورنامنٹ میں سنگلز، ڈبلز اور مکسڈ ڈبلز ٹائٹل اپنے نام کیے۔

اس کے بعد اس نے تاریخ رقم کی کیونکہ وہ باوقار اورنج باؤل ٹینس چیمپئن شپ میں کانسی کا تمغہ جیتنے والی پہلی پاکستانی اسٹار بن گئیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں