اسحاق ڈار نے سینیٹ میں نیوکلیئر پروگرام سے متعلق دیے گئے بیان کی وضاحت کر دی

اسحاق ڈار نے کہا کہ آئی ایم ایف کی جانب سے پاکستان کے لیے اپنے قرض کے پروگرام میں تاخیر کی وجہ یہ ہے کہ وہ اس بات کو یقینی بنانا چاہتے ہیں کہ پاکستان دہشت گردی کی روک تھام کے لیے ہر ممکن کوشش کر رہا ہے۔

وزیر خزانہ نے وضاحت کی کہ پاکستان کو اپنا جوہری پروگرام تیار کرنے کا حق ہے جیسا کہ وہ مناسب سمجھتا ہے، اور اس کا آئی ایم ایف کے ساتھ جاری مذاکرات سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

اسحاق ڈار نے مزید کہا کہ نہ تو آئی ایم ایف اور نہ ہی کسی دوسرے ملک نے ہماری جوہری صلاحیت کے حوالے سے کوئی شرط عائد کی ہے اور نہ ہی پاکستان سے کوئی مطالبہ کیا ہے اور آئی ایم ایف کے ساتھ اسٹاف لیول معاہدے میں تاخیر خالصتاً تکنیکی وجوہات کی بناء پر ہے جس کی وجہ سے ہم آئی ایم ایف کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہیں تاکہ اسے معاہدے کو جلد از جلد حتمی شکل دی جا سکے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں