اردن کی پارلیمنٹ نے اسرائیلی سفیر کوملک بدر کرنے کی سفارش کردی

اردن کی پارلیمنٹ نے اسرائیل کی انتہائی دائیں بازو کی جماعت سے تعلق رکھنے والے ایک حکومتی وزیر کے فلسطینی مخالف بیان کے خلاف احتجاجاً اسرائیل کے سفیر کو ملک سے نکالنے کی سفارش کے حق میں ووٹ دیا ہے۔

اسرائیلی وزیر خزانہ نے کہا کہ اس ہفتے اپنی تقریر کے دوران جو نقشہ پیش کیا اس میں نہ کوئی فلسطین ہے اور نہ ہی کوئی فلسطینی عوام۔ انہوں نے مزید کہا کہ نقشے میں مقبوضہ فلسطینی علاقے اور اردن اسرائیل کا حصہ ہیں۔

اس واقعےپر شدید ردعمل سامنے آیا اور اردن کی وزارت خارجہ نے عمان میں اسرائیلی سفیر کو طلب کر کے اپنا احتجاج درج کرایا،مصر اور متحدہ عرب امارات کی حکومتوں نے بھی سموٹریچ کے قول و فعل کی مذمت کرتے ہوئے بیانات جاری کیے۔

قانون سازی کے اجلاس کے دوران ایوان نمائندگان کے اسپیکر احمد الصفادی نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیلی وزیر خزانہ بیزلیل سموٹریچ کے جواب میں کارروائی کرے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں