پاکستان میں ادارے بحران سے نمٹنے کے قابل نہیں رہے، ہیومن رائٹس کمیشن

ہیومن رائٹس کمیشن آف پاکستان پاکستان کی سیاسی صورتحال پر پریشان ہے۔

انسانی حقوق کمیشن کی چیئرپرسن حنا جیلانی نے کہا کہ ملکی ادارے موجودہ بحران سے نمٹنے کے قابل نہیں رہے اور سیاسی دانشمندی اور قیادت کا فقدان ہے۔ انہوں نے کہا کہ عدلیہ کو اپنی اجتماعی دانش کے مطابق کام کرنا چاہیے اور سچ سامنے لانا چاہیے۔ محترمہ جیلانی نے کہا کہ ججز کے فل بنچ کی تشکیل میں رکاوٹیں ہیں۔

ان کا کہنا تھاکہ 2 اسمبلیوں کو تحلیل کرنے کے پیچھے کوئی ایجنڈا تھا تو سیاستدان پارلیمنٹ میں بیٹھ کر بات کریں، کسی اور جانب نہ دیکھیں، الیکشن کے التوا کا جواز بتائیں، اپوزیشن غیر ذمہ دار ہے تو حکومت بھی بدلہ چکانے میں پیچھے نہیں۔

حنا جیلانی کا کہنا تھاکہ ایچ آر سی پی ثالثی کا کردار ادا نہیں کرے گا، سیاستدان بحران کا خود حل نکالیں، الیکشن تواتر سے ہونے چاہئیں، 30 اپریل کو الیکشن ضرور ہونے چاہئیں،  اگر 8 اکتوبر کو کرانے ہیں تو اس کیلئے معاہدہ ہونا چاہیے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں