ایلون مسک کا اپنے خلاف 258 ارب ڈالر کی دھوکہ دہی کا مقدمہ خارج کرنے کی درخواست

ایلون مسک نے ایک امریکی جج سے کہا ہے کہ وہ اپنے خلاف 258 بلین ڈالر کے فراڈ کا مقدمہ خارج کر دیں۔ مقدمہ میں ایلون مسک پر کرپٹو کرنسی DodgeCoin کی پشت پناہی کے لیے اہرام اسکیم چلانے کا الزام لگایا گیا ہے۔

ایلون مسک اور ٹیسلا کے وکلاء کا کہنا ہے کہ ڈوج کوائن کے سرمایہ کاروں کی طرف سے دائر مقدمہ ایک جعلی کہانی ہے جو ان لوگوں کی بنائی ہوئی ہے جو نہیں سمجھتے کہ مسک کیا کر رہا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ Dogecoin کے بارے میں اس کی ٹویٹس اور کوئی اونچائی نہیں، کوئی کمی نہیں صرف Dogecoin کی مقبولیت کا حوالہ دیتی ہے، اور اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ وہ کسی کو دھوکہ دینے کا ارادہ رکھتا تھا۔

مسک کے وکلاء نے کہا، ‘ایک جائز کرپٹو کرنسی جس کا مارکیٹ کیپ تقریباً 10 ارب ڈالر ہے ،  کے بارے میں حمایت کے الفاظ، یا اس کے بارے میں مضحکہ خیز تصویریں ٹویٹ کرنے میں کچھ بھی غیر قانونی نہیں ہے ، اس لیے عدالت کو مدعیوں کے تصورات کو رد کرتے ہوئے شکایت کو خارج کرنا چاہئے۔’

ایلون مسک کے خلاف دائر کیے گئے  نقصانات کے  اعداد و شمار مقدمہ دائر ہونے سے پہلے 13 ماہ میں ڈوج کوائن  کی مارکیٹ ویلیو میں ہونے والی  کمی سے تین گنا زیادہ ہیں۔ ڈوج کوائن فاؤنڈیشن بھی اس مقدمے میں فریق ہے اور مقدمے کا اخراج چاہتی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں