نواز شریف اور مریم کی چیف جسٹس پر کڑی تنقید، مستعفی ہونے کا مطالبہ

نواز شریف اور مریم نواز چیف جسٹس پاکستان عمر عطا بندیال سے ناراض ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ اچھا کام نہیں کر رہے اور وہ چاہتے ہیں کہ وہ استعفیٰ دیں۔

نواز شریف نے کہا کہ عدالتیں مسائل کو حل کرنے میں مدد کر سکتی ہیں ان کا سبب نہیں۔ وہ چیف جسٹس کے کیس کے بارے میں بات کر رہے تھے جنہوں نے کچھ فیصلے کیے ہیں جو کچھ لوگوں کو پسند نہیں ہیں۔ نواز کا خیال ہے کہ چیف جسٹس کو اپنے کیے کی وجہ سے استعفیٰ دے دینا چاہیے۔

 دوسری جانب مسلم لیگ ن کی چیف آرگنائزر مریم نواز نے چیف جسٹس کے خلاف ایک شہری کی جانب سے ریفرنس دائر کیے جانے پر کہا کہ چیف جسٹس کے خلاف ریفرنس حکومت اور کابینہ کو دائر کرنا ہوگا۔ اگر صدر اسے روکتا ہے، تو دنیا برائی کے گٹھ جوڑ کو دیکھ لے گی  اور جرائم میں ساتھیوں کی نشاندہی ہوجائے گی۔ یہ اس حقیقت کو مزید پختہ کرے گا کہ انہوں نے  چیف جسٹس سے ہاتھ ملایا ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ بھی  ریفرنس دائر کر سکتی ہے۔ چیف جسٹس اور ان کے پسندیدہ ججز کو فیصلہ آنے تک استعفیٰ دینے کو کہا جائے۔ انصاف کا تقاضا ہے کہ انصاف کو آسانی اور غیر جانبداری سے انجام دیا جائے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Author

  • Muhammad Amir

    Muhammad Amir is working with Burj News as Senior Writer

    https://urdu.burjnews.com/author/mamirsalarzai/ mamirsalarzai@urdu.burjnews.com Amir Muhammad

اپنا تبصرہ بھیجیں