سجل علی نے بالی ووڈ میں دوبارہ کام کرنے کی خواہش ظاہر کر دی

سجل علی بھارتی فلموں میں کام کرنا چاہتی ہیں لیکن انہیں لگتا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان موجودہ سیاسی کشیدگی فنکاروں کے لیے مشکل بنا رہی ہے۔

سجل علی نے اپنے فلمی اداکاری کیرئیر کا آغاز 2017 کی بالی ووڈ فلم “مام” سے کیا، جس میں آنجہانی مشہور اداکارہ سری دیوی کی بیٹی کا کردار ادا کیا۔ ’’ماں‘‘ کے بعد وہ پاکستان چلی گئیں۔ اس سال مارچ میں ان کی پہلی ہالی ووڈ (عالمی فلم) “What’s Love Got To Do With It” ریلیز ہوئی، جس کی ہدایت کاری بھارتی فلمساز شیکھر کپور نے کی تھی اور اس میں شبانہ اعظمی نے اداکاری کی تھی۔ اس نے ایک اہم کردار ادا کیا۔

 حال ہی میں بھارتی میڈیا سے بات کرتے ہوئے اداکارہ سجل علی نے بالی ووڈ میں دوبارہ کام کرنے کی خواہش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ “سری دیوی کے ساتھ کام کرنے کا تجربہ بہت ہی اچھا تھا اور وہ شوٹنگ کے دوران ان کے گھر ہی ٹھہری تھیں اور جھانوی کپور سے ان اچھی دوستی تھی جبکہ انکی والدہ نے بھی بھارت کا دورہ کیا تھا اور وہ بھی سری دیوی کی میزبانی اور محبت سے بے حد خوش ہو ئیں تھیں۔”

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ “واٹس لو گاٹ ٹو ڈو ود اٹ” کی شوٹنگ کے دوران بھی شیکھر کپور اور شبانہ اعظمی نے انہیں بہت پیار اور عزت دی، جس میں اپنائیت تھی۔اداکارہ نے دونوں ممالک کے درمیان سیاسی کشیدگی پر بھی بات کی اور کہا کہ “سیاسی معاملات کی وجہ سے پاکستان اور بھارت کے آرٹسٹ اور آرٹ مشکل حالات سے گزر رہے ہیں”۔

اداکارہ نے  بھارت میں دوبارہ کام کرنے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ “وہ بھارت میں کام کرنا چاہتی ہیں لیکن انہیں معلوم نہیں ایسا کب تک ممکن ہو سکے گا، وہ وہاں کام کرسکیں گی یا نہیں”.

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں