تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کو آئندہ 24 گھنٹوں میں ہسپتال سے ڈسچارج کر دیا جائے گا۔

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان کو 24 گھنٹے میں شوکت خانم اسپتال سے ڈسچارج کر دیا جائے گا۔

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق پی ٹی آئی چیئرمین اب بھی شوکت خانم اسپتال میں زیرعلاج ہیں تاہم اب ان کی حالت کافی بہتر ہے۔

اسپتال ذرائع کے مطابق سابق وزیراعظم کا آج ایکسرے، ٹیسٹ اور مکمل چیک اپ ہوگا۔

عمران خان کو آئندہ 24 گھنٹوں میں شوکت خانم سے ڈسچارج کیے جانے کا امکان ہے۔ ہسپتال کے باہر پولیس اور ڈولفن فورس کی بھاری نفری تعینات ہے۔ اس سے قبل پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان کی پنجاب کے علاقے وزیر آباد میں لانگ مارچ کے دوران ٹانگ میں گولی لگنے کے بعد گولی کے ٹکڑے نکالنے کے لیے شوکت خانم اسپتال میں آپریشن کیا گیا۔

سابق وزیراعظم کی ٹانگ کی سرجری ڈیڑھ گھنٹے تک جاری رہی جس کے بعد کامیاب آپریشن کے بعد انہیں نجی کمرے میں منتقل کردیا گیا۔ ہسپتال کے ذرائع کے حوالے سے بتایا گیا کہ اگرچہ آپریشن معمولی تھا لیکن عمران خان کی ٹانگ سے ہر ذرہ نکالنے کو یقینی بنانے کے لیے وقت درکار تھا۔

سابق وزیراعظم اور پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اور پی ٹی آئی کے دیگر رہنما پارٹی کے لانگ مارچ کے دوران اللہ والا چوک میں پی ٹی آئی کے استقبالیہ کیمپ کے قریب فائرنگ کے نتیجے میں زخمی ہوگئے۔

حملے کے دوران زخمی ہونے والے پی ٹی آئی رہنما فیصل جاوید خان نے تصدیق کی کہ حملے میں پارٹی کا ایک کارکن یا اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے۔

یاد رہے کہ پی ٹی آئی کے سربراہ عمران خان پر قاتلانہ حملے کے بعد صدر عارف علوی، وزیراعظم شہباز شریف اور پاک فوج کے حکام نے حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے ان کی صحت کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار بھی کیا تھا۔

Author

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں